افغان نائب صدر بم دھماکے میں بال بال بچ گئے، 10 افراد ہلاک

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان کے نائب صدر امیر اللہ صالح کا قافلہ دارالحکومت کابل کی مرکزی شاہراہ سے گزر رہا تھا کہ سڑک کنارے کھڑی ایک گاڑی زور دار دھماکے سے تباہ ہوگیئ جس کے نتیجے میں نائب صدر کے 10 محافظ ہلاک اور 16 زخمی ہوگئے۔

دھماکے میں نائب صدر امیر اللہ صالح محفوظ رہے، انہوں نے ٹیلی وژن پر پیغام میں اپنی خیریت سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ حملہ مجھے قتل کرنے کے لیے کیا گیا تھا لیکن میں محفوظ رہا۔ مجھے افسوس ہے میری وجہ سے قیمتی جانیں گئیں۔ حملہ آوروں کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔

دھماکے سے نائب صدر کے محافظوں کی تین گاڑیاں مکمل طور پر تباہ ہوگئیں، دھماکے کے وقت قافلے میں نائب صدر کے بیٹے بھی موجود تھے اور خوش قسمتی سے وہ بھی محفوظ رہے۔ طالبان نے حملے سے لاتعلقی کا اظہار کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں