امریکا کے 400 امیر ترین افراد میں پاکستانی نژاد شاہد خان بھی شامل

امریکی جریدے فوربز کی جاری کردہ امریکا کے 400 امیر ترین افراد کی فہرست میں مسلسل تیسرے سال پہلے نمبر پر ایمیزون کے سی ای او جیف بزوز ہیں ، 2020 میں جن کے مجموعی اثاثوں کاتخمینہ 179 ارب ڈالر لگایا گیا ہے۔111 ارب ڈالر کے اثاثوں کے ساتھ دوسرے اور 85 ارب ڈالر کے فیس بک کے مالک مارک زکربرگ امیرترین افراد کی فہرست میں تیسرے نمبر پر رہے۔

سب سے زیادہ فائدے میں کون رہا
رواں سال ٹیکنالوجی کمپنی ٹیسلا کے مالک ایلان مسک کی دولت میں سے سے زیادہ شرح کے ساتھ اضافہ ہوا۔ گزشتہ برس کی درجہ بندی کے مقابلے میں ان کی دولت 242 فی صد اضافہ ہوا اور ٹیسلا کے حصص کی قیمتوں میں 520 فیصد اضافے سے ایلان مسک کی دولت میں 48 ارب ڈالر سے زائد کا اضافہ ہوا۔ گزشتہ برس مسک 19.9 ارب ڈالر کے ساتھ 23 ویں نمبر پر تھے تاہم اس اسال ان کا نمبر ساتواں ہیں اور اثاثوں کی مجموعی مالیت 68 ارب ڈالر ہوچکی ہے۔

فہرست میں شامل واحد پاکستانی

دنیا کے 400 امیر ترین افراد کی فہرست میں شامل واحد پاکستانی نژاد امریکی شاہد خان انجینیئر ہیں۔ وہ 16 برس کی عمر میں امریکا گئے اور اس وقت ان کے پاس 500 ڈالر اور جہاز کے ٹکٹ کے سوا کچھ بھی نہیں تھا۔ 1980 میں انہوں نے گاڑیوں کے پرزوں کی کمپنی فلیکس این گیٹ اپنے پرانے مالک سے خریدی۔ 7اعشاریہ 8 ارب ڈالر کے اثاثوں کے ساتھ وہ اس فہرست میں 66 ویں نمبر پر ہیں۔

shahid-khan

ان کا ڈیزائن کیا گیا ایک پیس کا ٹرک بمپر ان کی کامیابی کی بنیادی وجہ بنا۔ اس وقت ان کی کمپنی کے 64 پلانٹ اور 24 ہزار ملازمین ہیں۔ اس کے علاوہ شاہد خان کھیلوں کے کلبز اور نیوز چینل کے بھی مالک ہیں۔

امریکی صدر کا 275 واں نمبر

2019 کے مقابلے میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ دولت مندی کے اعتبار سے 16 درجے نیچے آگئے ہیں۔ امریکی جریدے کے مطابق ٹرمپ کی برانڈنگ بھی زوال کا شکار ہے اور اب ان کے رئیل اسٹیٹ ڈیولپرز نے ٹرمپ کا نام استعمال کرنا چھوڑ دیا ہے۔ ان کے اثاثوں میں گزشتہ برس تیزی سے کمی واقع ہوئی ہے۔

کورونا وبا سے بھی دولت میں اضافہ نہ رُکا

امریکی جریدے کے مطابق کورونا وبا کے باوجود امریکا کے چارسو ارب پتیوں کی دولت میں کمی واقع نہیں ہوئی۔ امریکی ارب پتیوں کی دولت میں گزشتہ سال کے مقابلے میں 8 فی صد اضافہ ہوا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں