وطن نیوز انٹر نیشنل

برسلز میں ایک تعزیتی ریفرنس کے شرکاء نے مرحوم علی گیلانی کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا

برسلز (پ۔ر)
یورپی دارالحکومت برسلز میں ایک تعزیتی ریفرنس کے شرکاء نے عظیم کشمیری رہنماء سید علی شاہ گیلانی کو زبردست الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا ہے۔علی گیلانی کی وفات پر برسلز میں تعزیتی ریفرنس کا انعقاد کشمیرکونسل ای یو نے کیا۔
اس دوران چیئرمین کشمیرکونسل ای یو علی رضا سید، ورلڈ کشمیر ڈائس پورہ الائنس یورپ کے صدر چوہدری خالد جوشی، پاکستانی دانشور راؤ مستجاب اور شیراز راج اور دیگر شخصیات نے گفتگو کی۔
واضح رہے کہ دونوں اطراف کے کشمیریوں کے علاوہ دنیا کے دیگر خطوں میں مقیم کشمیریوں اور ان کے حامیوں نے عظیم کشمیری رہنماء علی گیلانی جنہوں نے تحریک آزادی کشمیر کی خاطر اپنی زندگی کے دوران طویل مدت قید وبند کی صہوبتیں برداشت کیں، کی وفات پر سوگ منایا۔
شرکاء نے کہاکہ مشکلات کے باوجود علی گیلانی اپنے ارادوں میں مصمم رہے اور کشمیریوں کی بھرپور قیادت اور رہنمائی کی۔ مرحوم علی گیلانی نے تین کشمیری نسلوں کو اپنی جدوجہد سے متاثر کیا۔ وہ کشمیریوں کے ہیرو اور کشمیر کی سچی آواز تھے۔ وہ اپنے اصولوں اور نظریات سے ایک لمحہ بھی پیچھے نہیں ہٹے۔انہوں نے کبھی سمجھوتہ نہیں کیا اور کشمیریوں اور کشمیر کاز کے ساتھ غیرمشروط وابستگی اور محبت کی وجہ سے وہ ہمیشہ یاد رکھے جائیں گے۔
اس موقع پر کشمیرکونسل ای یو کے چیئرمین علی رضا سید نے کہاکہ آج کشمیری ایک عظیم اور پرعزم رہنماء سے محروم ہوگئے ہیں۔ ایسی عظیم شخصیات صدیوں بعد پیدا ہوتی ہیں۔
انہوں نے کہاکہ سید علی شاہ گیلانی نے تمام زندگی جموں و کشمیر کی بھارت سے آزادی کے لیے جدوجہد کی اور اپنے اصولوں پر ہمیشہ مصمم رہے۔ ان کی وفات ہمارے لیے عظیم صدمہ اوردکھ ہے۔ آج دونوں اطراف کے کشمیری اور دنیا بھر میں مقیم کشمیری غم زدہ ہیں۔دیگر شرکاء نے کہاکہ علی شاہ گیلانی پہاڑ کی طرح کشمیریوں کے حق خودارادیت کی حمایت میں اپنے عظیم موقف پر قائم رہے۔ ان کی یہ جدوجہد ناقابل فراموش ہے۔
اس دوران تعزیتی ریفرنس کے شرکاء نے دعا کی کہ رب کریم سید علی گیلانی کو جوار رحمت میں جگہ عطا فرمائے اور ان کے پس ماندگان اور پوری کشمری قوم کو صبر جمیل عطا فرمائے، آمین

.

اپنا تبصرہ بھیجیں

0