وطن نیوز انٹر نیشنل

برسلز: یورپی ہیڈکوارٹز برسلز میں بے گناہ کشمیریوں کے قتل عام کے خلاف دھرنا دیا گیا

برسلز (پ۔ر)
برسلز: مقبوضہ کشمیر میں بڑھتے ہوئے بھارتی مظالم خصوصاً سویلین باشندوں کے قتل عام کے خلاف یورپی ہیڈکوارٹرز برسلز میں آج احتجاجی دھرنا دیا گیا۔یورپی یونین کے مرکزی اداروں خصوصاً ای یو ایکسٹرنل ایکشن سروس اور یورپی کمیشن کے دفاتر کے سامنے احتجاجی دھرنے کا اہتمام کشمیر کونسل ای یو نے کیا۔
دھرنے میں شریک افراد نے بھارتی ظلم وستم کا شکار کشمیری افراد کے بچوں اور خواتین کی تصاویراٹھا رکھی تھیں۔ احتجاج کے دوران اس کے علاوہ، حالیہ واقعات میں شہید ہونے والے نوجوانوں کی تصاویر بھی نمایاں تھیں۔ احتجاج کرنے والوں نے پلے کارڈز بھی اٹھا رکھے تھے جن پر کشمیریوں کی حمایت اور بھارتی مظالم کے خللاف نعرے درج تھے۔ یاد رہے کہ حالیہ دنوں سری نگر کے قریب حیدرپورہ کے مقام پر سویلین کو بے دردی سے قتل کیا گیا۔ قتل ہونے والے سویلین میں ایک ڈاکٹر اور تین تاجروں بھی شامل ہے۔ حیدرپورہ کا واقعہ ریاستی دہشت گردی کی ایک بھیانک مثال ہے۔احتجاج کرنےوالوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر میں سویلین کا پے درپے قتل عام قابل مذمت ہے۔
ان واقعات کے علاوہ، بھاریت سیکورٹی فورسز کے ہاتھوں کشمیری نوجوانوں کے ماورائے عدالت اور حراست کے دوران قتل عام کا سللہ سلسلہ جاری ہے۔ اس موقع پر چیئرمین کشمیر کونسل ای یو علی رضا سید نے بتایاکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم وستم دن بدن بڑھ رہا ہے۔ انہوں نے زور دے کر کہاکہ عالمی برادری مقبوضہ کشمیر کی گھمبیر صورتحال کا فوری نوٹس لے۔ انہوں نے زور دے کر کہاکہ عالمی برادری کو کشمیر میں قتل عام پر خاموش نہیں بیٹھنا چاہیے۔ چیئرمین کشمیر کونسل ای یو نے مزیدکہاکہ ہم بھارتی ظلم وستم کے خلاف یورپی اداروں میں آواز بلند کرتے رہیں گے۔ علی رضا سید نے مطالبہ کیا کہ عالمی برادری خصوصاً یورپی یونین اور اقوام متحدہ مقبوضہ کشمیر میں ظلم و ستم بند کروایں۔ مسئلہ کشیر کے منصفانہ حل کے لیے اپنا مؤثر کردار ادا کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

0