چاند کی رویت پر اتفاق رائے کیلئے اہم اجلاس، شہادت کے طریقہ کار پر بحث

ملک بھر میں ایک ہی روز چاند کی رویت کے حوالے سے اہم اجلاس ہوا ہے جس میں چاند کی رویت سے متعلق شہادت کے طریقہ کار اور دیگر مسائل پر تفصیلی بحث کی گئی ہے۔

اسلام آباد میں رؤیت ہلال پر اتفاق رائے کے حوالے سے وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری کی زیر صدارت مشاورتی اجلاس ہوا، جس میں مرکزی رؤیت ہلال کمیٹی، سپارکو، محکمہ موسمیات، وزارت سائنس و ٹیکنالوجی، صوبائی محکمہ اوقاف اور نجی کمیٹیوں کے نمائندے شریک ہوئے۔ اجلاس میں شہادت کے طریقہ کار، شہادت کے انتظار کی مدت اور جدید آلات کے استعمال پر بحث ہوئی۔

اجلاس کے دوران پیر نور الحق قادری نے کہا کہ سابق چیئرمین مرکزی رویت ہلال کمیٹی اور ممبران کو ان کی خدمات پر خراج تحسین پیش کرتے ہیں، نئے چیئرمین مولانا عبد الخبیر آزاد تمام اسٹیک ہولڈرز سے ملاقاتیں اور مشاورت جاری رکھیں، مرکزی رویت ہلال کمیٹی اور دیگر احباب بہتری کے لئے وزارت کو اپنی تجاویز دیں۔
پیر نور الحق قادری نے کہا کہ ایک ہی روز مذہبی تہوار نہ ہونے پر علمائے کرام تنقید کا نشانہ بنتے ہیں، قوم کو بتانا چاہتے ہیں کہ حکومت ملی یکجہتی اور قومی مفاہمت کے لئے سرگرم عمل ہے، ہم رویت کے حوالے سے تصادم اور اختلاف کو کم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، اتفاق رائے کے لئے نجی کمیٹیوں سے بھی تعاون کی درخواست کر رہے ہیں، زونل کمیٹیوں کو مزید متحرک اور فعال بنایا جائے گا، تمام صوبوں اور اسٹیک ہولڈرز سے آئندہ بھی مشاورت جاری رکھیں گے، کوشش ہے کہ رمضان المبارک کے بعد رویت ہلال پر قانون سازی مکمل ہو جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں