وطن نیوز انٹر نیشنل

برسلز: علی رضا سید کی یورپی پارلیمنٹ کی سویلین لبرٹیز کمیٹی کے سربراہ سے ملاقات، مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر گفتگو ہوئی

برسلز(پ۔ر)
چیئرمین کشمیر کونسل ای یو علی رضا سید نے یورپی پارلیمنٹ کی سویلین لبریٹیز، جسٹس اینڈ ہوم آفیرز کمیٹی کے سربراہ جؤن فرنانڈو لوپز اگویلار سے برسلز میں ان کے دفتر میں ملاقات کی۔ملاقات کے دوران علی رضا سید نے یورپی پارلیمنٹ کے عہدیدار کو مقبوضہ کشمیر کی تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کیا، خاص طور پر انہیں سری نگر اور دیگر مقبوضہ علاقوں میں سویلین کے قتل عام کے پے در پے واقعات کے بارے میں بریف کیا۔
ملاقات کے بعد اپنے ایک بیان میں چیئرمین کشمیرکونسل ای یو علی رضا سید نے بتایا کہ یورپی پارلیمنٹ کی سویلین لبریٹیز کمیٹی کے سربراہ نے ان کی باتوں کو غور سے سنا اور کہاکہ یورپی یونین انسانی حقوق کے تحفظ کو اپنی پہلی ترجیح قرار دیتی ہے اور دنیا کے کسی بھی خطے میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف آواز اٹھاتی ہے۔
علی رضا سید نے کہاکہ حالیہ دنوں مقبوضہ کشمیر کے علاقے حیدرپورہ میں ایک ڈاکٹر اور تین تاجروں کو بے دردی سے قتل کردیا گا گیا جو ریاستی دہشت گردی کی ایک بھیانک مثال ہے۔ انہوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر میں سویلین کا پے درپے قتل عام قابل مذمت ہے۔علی رضا سید نے حالیہ دنوں مقبوضہ کشمیر میں ایک طالبعلم آصف شبیر نائیک کی گرفتاری کی بھی مذمت کی۔
انہوں نے کہاکہ کشمیری طلباء بھی بھارتی جبر و استبداد سے محفوظ نہیں۔واضح رہے کہ کشمیرکونسل ای یو نے ان دنوں مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں روکوانے کے لیے اہم یورپی اداروں کے عہدیداروں اور اراکین پارلینٹ سے ملاقاتوں اور بات چیت کا سلسلہ تیز تر کردیا ہے۔ علی رضا سید کا کہنا ہے کہ ہم کوشاں ہیں کہ یورپی ادارے اپنا اثرورسوخ استعمال کریں تاکہ کشمیریوں کے قتل عام کی تازہ لہر کو رکوایا جاسکے۔
چیئرمین کشمیر کونسل ای یو نے مزیدکہاکہ ہم بھارتی ظلم وستم کے خلاف یورپی اداروں میں آواز بلند کرتے رہیں گے۔ انہوں نے زور دے کر کہاکہ عالمی برادری کو کشمیر میں قتل عام پر خاموش نہیں بیٹھنا چاہیے۔ ای یو اور اقوام متحدہ مقبوضہ کشمیر میں مظالم بند کروایں اور مسئلہ کشیر کے منصفانہ حل کے لیے اپنا مؤثر کردار ادا کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

0