وطن نیوز انٹر نیشنل

ڈنمارک، دارالحکومت کوپن ہیگن کے شاپنگ مال میں فائرنگ، 3 افراد ہلاک

ڈنمارک کے دارالحکومت کوپن ہیگن کے ایک شاپنگ مال میں گزشتہ روز فائرنگ سے تین افراد ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہوگئے۔

امریکی خبر رساں ایجنسی اے پی نے ڈینش پولیس کے حوالے سے بتایا ہے کہ فائرنگ کے واقعے کے بعد ایک 22 سالہ ڈینش نوجوان کو گرفتار کیا گیا ہے تاہم اس بات کے شواہد نہیں ہیں کہ کوئی اور شخص بھی اس واقعے میں ملوث ہے جبکہ پولیس مزید تحقیقات کر رہی ہے۔

ڈنمارک کے ایک ٹی وی چینل ٹی وی 2 نے مبینہ حملہ آور کی ایک دھندلی سی تصویر جاری کی ہے جس میں مبینہ حملہ آور کو بغیر بازو والی ٹی شرٹ اور گھٹنوں تک لمبا شارٹ پہنے دیکھا جا سکتا ہے اور وہ رائفل تھامے ہوئے ہے۔

ایک عینی شاہد کے مطابق فائرنگ کی آواز سنتے ہی کچھ افراد دکانوں کے اندر چھپ گئے جبکہ بعض افراد خوف زدہ ہوکر دوڑ پڑے جس سے بھگدڑ مچ گئی۔ ایک اور عینی شاہد کے مطابق حملہ آور بہت پرتشدد اور مشتعل نظر آرہا تھا۔

ایک 53 سالہ آئی ٹی کنسلٹنٹ ہینس کرسچیئن اسٹولٹز جو اپنی بیٹیوں کے لیے اتوار کی رات شاپنگ مال کے قریب ہونے والے ایک کنسرٹ کے ٹکٹ خریدنے آئے تھے کا کہنا تھا کہ یہ سراسر دہشت گردی ہے اور بہت خوفناک واقعہ ہے۔

دارالحکومت کے مضافاتی علاقے اسکینڈے نیویا کے ایک بڑے شاپنگ مال دی فیلڈز میں پیش آئے اس فائرنگ کے واقعے کی وجہ تاحال سامنے نہیں آسکی۔ ڈینش پولیس حکام نے ہلاک اور زخمی ہونے والے افراد کے مکمل اعداد و شمار نہیں بتائے تاہم کہا ہے کہ مشتبہ شخص سفید فام نسل پرست ہے۔

ڈنمارک کی وزیراعظم میٹ فریڈرکسن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ان کا ملک ایک ظالمانہ حملے کا نشانہ بنا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

0